سندھ کے بلدیاتی ادارے تحلیل ، نوٹی فکیشن جاری ویب ڈیسک

کراچی : سندھ کے بلدیاتی اداروں کو تحلیل کرنے کا نوٹی فکیشن جاری کرتے ہوئے سابق منتخب نمائندوں کو سرکاری گاڑیاں اور دیگر مراعات واپس کرنے کی ہدایت کردی۔

تفصیلات کے مطابق سندھ کے بلدیاتی اداروں کو مدت مکمل ہونے پر تحلیل کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کردیاگیا ، سندھ حکومت نے میئرز، ڈپٹی میئرز چیئرمین، وائس چیئرمین اور منتخب نمائندوں کی مدت مکمل ہونے کا پروانہ جاری کیا۔

میونسپل کارپوریشن، ڈسٹرکٹ کونسلز، یونین کونسلز کے ساتھ ساتھ میونسپل ، ٹاؤن اور یونین کمیٹیز بھی تحلیل کردی گئی۔

نوٹیفکیشن میں سابق منتخب نمائندوں کو سرکاری گاڑیاں اور دیگر مراعات واپس کرنے کی ہدایت کردی۔

دوسری جانب بلدیاتی اداروں میں جلد نئی تعیناتیوں کا امکان ہے، حیدرآباد کیلئے ایم کیوایم اور پیپلزپارٹی نے اپنے اپنے نام دے دیے ہیں، ذرائع کے مطابق ایڈمنسٹریٹر سکھر کیلئے شاہ ہاؤس اور شیخ ہاؤس میں پھر ٹھن گئی ہے۔

خورشید شاہ نےموجودہ ڈی سی راناعدیل اور شیخ ہاؤس نےسابق ڈی سی رحیم بخش میتلو اور نثارمیمن کو تجویزکردیا ہے۔

خیال رہے چند روز قبل معروف بیوروکریٹ یونس ڈھاگا کو ایڈمنسٹریٹر کراچی لگائے جانے کا امکان کی خبریں آئی تھیں تاہم وزیر تعلیم سندھ نے خبروں کی تردید کردی تھی۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ یونس ڈھاگا گریڈ بائیس کے افسر رہے ہیں اور کئی اہم وفاقی و صوبائی سرکاری عہدوں پر ذمے داری انجام دے چکے ہیں۔

Comments are closed.