”کورین نسخہ چہرہ بالکل 16 سال کی لڑکی جیسا جوان“

جوان رہنے کیلئے چہرے کی شادابی اور تازگی بنیادی کردار ادا کرتی ہے لیکن چہرے سے جھریوں اور چھائیوں کا خاتمہ آپ کو بالکل جوان اور جازب نظر رکھتا ہے ۔ خواتین اور آجکل مردحضرات کو یہ مسئلہ بہت زیادہ پیش آرہا ہے ۔ چہرے پر جھریوں اور چھائیوں کے نمودار ہونے کی بہت سی وجوہات ہیں۔جاری ہے ۔ جن میں زیادہ تر بازاری آئلی چیزوں کا کثرت سے استعمال کرنا ہے۔اس کے ساتھ ساتھ وٹامن سی اور ای کی کمی کی وجہ سے یہ چھائیاں نمودار ہوتی ہیں۔ناک کے اوپر چھائیاں بعض اوقات کوشش کے باوجود ختم نہیں ہوتی ہیں۔یہ گھریلو ٹوٹکا استعمال کریں۔

اور چہرے کی چھائیوں سے ہمیشہ کیلئے نجات پائیں۔ وٹامن ای کیپسول : 2 عدد ،دہی : دو چائے کے چمچ، شہد : آدھا چائے کا چمچ، لیموں کا رس : آدھا چائے کا چمچ،ایلوویرا جیل: ایک بڑا چمچ ، وٹامن ای کیپسول کو ایک پیالے میں کھول لیں پھر تمام اجزاء کو اس میں اچھی طرح مکس کر لیں۔اس پیسٹ کو دس منٹ تک چہرے پر لگائیں اور پھر تازہ پانی سے دھو لیں۔ایک مہینہ ایک دن چھوڑ کر یہ ٹوٹکا استعمال کریں۔ایک مہینے میں چہرہ بالکل صاف ہو جائے گا اور رنگت میں بھی نکھار آجائے گا۔چہرے کے عام مسائل میں چھائیوں کا مسئلہ بہت بڑا ہے۔

۔بعض اوقات چہرے کی چھائیاں ختم ہو جاتی ہیں لیکن ناک سے ان کے نشان نہیں مٹتے اور وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ یہ نشان گہرے ہو جاتے ہیں۔جگر کی بیماری میں خواتین کے چہرے اور ناک پر پڑنے والی چھائیاں کبھی بھی ختم نہیں ہوتی ہیں۔ دراصل یہ چھائیاں ہارمونز پرابلم کی وجہ سے بھی پڑنا شروع ہو جاتی ہیں۔جاری ہے ۔۔چہرے کے داغ دھبوں اور چھائیوں سے ہمیشہ کیلئے نجات پانے کیلئے روپ کارما وائٹننگ کریم استعمال کریں۔اس کے استعمال سے چہرہ بالکل صاف اور شفاف ہو جائے گا۔

روپ کارما وائٹننگ کریم کے کوئی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہیںایسی خواتین جن کے چہرے پر بچے کی پیدائش کے بعد جھریاں اور چھائیاں بڑھ گئی ہوں ان کو چاہئے کہ وہ ناریل کا تیل ہاتھوں پر لگا کر اچھی طرح سارے چہرے کا ہلکا ہلکا مساج کریں اور مساج ہمشہ رات کوسونے سے پہلے کریں۔جاری ہے ۔ تاکہ چہرے سے جھریاں اور چھائیاں جلد از جلد ختم ہو جائیں کیونکہ مساج سے خون کی گردش تیز ہوتی ہے اور ہمارے چہرے کے ٹشوز بھی ٹائٹ رہتے ہیں اور ڈھیلا پن اور داغ دھبے نمودار نہیں ہوتے جس سے جلد جوان نظر آتی ہے۔باہر کھانا کھانے کا رواج عام ہو چکا ہے۔ہر خاص وعام بازار کے کھانوں کا شوقین نظر آتا ہے۔

۔جگہ جگہ فوڈ اسٹریٹ قائم ہو چکی ہیں۔جن میں طرح طرح کے کھانے دستیاب ہوتے ہیں۔ہر ویک اینڈ پر باہر جاکر کھانا کھانا سب سے مقبول تفریح بن چکی ہے۔باہر کے کھانے دیکھتے ہی منہ میں پانی بھر آتا ہے لیکن یہ کس طرح تیار ہوتے ہیں اکثر لوگ اس سے نا واقف ہیں۔جب ہم اپنا کھانا خود تیار کرتے ہیں تو اس بات کو یقینی بناتے ہیں کہ اس میں استعمال ہونے والی ہر چیز صاف ستھری اورخالص ہو۔اس کی تیاری میں کوئی مضر صحت چیز شامل نہ ہو۔جب ہم یہی چیز باہر کھاتے ہیں تو وہ اچھی تو بہت لگتی ہے لیکن اس کے صاف ستھراہونے کی کوئی گارنٹی نہیں ہوتی۔فوڈ اسٹریٹ اور ریستورانوں میں تیار شدہ یہ کھانے صحت کے لئے بہت نقصان دہ ہیں۔جو انسانی جسم کو نقصان پہنچانے کا باعث بنتے ہیں۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *